ہیئت

درحقیقت عرض ہے، ہیئت وعرض میں فرق یہ ہے کہ ہیئت میں حصول کا اعتبار کیا جاتا ہے ، اور عرض میں عروض کا لحاظ ہوتا ہے ،یعنی عرض کو عرض دوسری شی میں عروض کے اعتبار سے کہاجاتاہے ، اور ہیئت کو بذات خود حصول کے لحاظ سے ہیئت کہاجاتا ہے۔

نیز ہیئت ایک علم بھی ہے ، یعنی علم ہیئت ، جس میں اجرام بسیطہ علویہ اور اجسام سفلیہ (عنصریہ) سے کمیت وکیفیت اوروضع وحرکت لازمہ ابدیہ یا مقدمۃ الا فلاک کی حیثیت سے بحث کی جاتی ہے۔

error: Content is protected !!